ٹیکنالوجی ، کاروباری اور سٹارٹ اپ خبریں

آئی او بی ایم کا نوجوان طالب علم اسد علی میمن دنیا کا سب سے بلند ماؤنٹ ایوریسٹ پہاڑ سر کرنے کے لئے روانہ

59

- Advertisement -

کراچی:  انسٹی ٹیوٹ آف بزنس مینجمنٹ (آئی او بی ایم) کے نوجوان طالب علم اسد علی میمن کوہ پیمائی کی دنیا میں پاکستان کی طرف سے ایک نمایاں پہچان کے ساتھ سامنے آئے ہیں، وہ دنیا کی بلند ترین چوٹیاں سر کرنے والے کم عمر ترین پاکستانی بن گئے ہیں۔ آئی او بی ایم اور دیگر کاروباری اداروں کے تعاون سے اسد علی میمن اب اپنی اہم منزل ماؤنٹ ایورسٹ پہاڑ پر نظریں جمائے ہوئے ہیں۔

اسد علی میمن کی کوہ پیمائی کا سفر سال 2019 میں اس وقت شروع ہوا،جب وہ یورپ کی بلند ترین چوٹی ایلبرس کو سر کرنے والے سب سے کم عمر پاکستانی بن گئے، اسکے بعد سال 2020 میں جنوبی امریکا کی بلند ترین چوٹی ایکونکاگوا کو سر کرنے کا نمبر آتا ہے۔ انہوں نے پھرافریقہ کی بلند ترین چوٹی کیلی منجارو کو صرف 20 گھنٹوں میں سر کیا اور یہ کارنامہ انجام دینے والے وہ پہلے ایشیائی اور واحد پاکستانی بن گئے۔ سال 2022 میں اسد شمالی امریکا کی بلند ترین چوٹی ڈینالی سر کرنے والے سب سے کم عمر پاکستانی رہے جبکہ پاکستان سے مجموعی طور پر یہ تیسرے پاکستانی بن گئے۔

نوجوان پاکستانی کوہ پیما اسد علی میمن کا اگلا ہدف اپریل 2023 میں ماؤنٹ ایورسٹ چوٹی کو سر کرنا ہے، انکا حتمی مقصد تمام براعظموں کی بلند ترین چوٹیاں عبور کرنا ہے۔ ان کا منصوبہ ہے کہ وہ کسی مدد کے بغیر شمالی اور جنوبی قطبوں تک پہنچیں۔ صرف یہی نہیں، بلکہ وہ دنیا کی ایسی تمام 14 بڑی چوٹیوں کو سر کرنے کا بھی ارادہ رکھتے ہیں جو 8000 میٹر سے زیادہ بلند ہیں۔

- Advertisement -

آئی او بی ایم اس سنگ میل کو سر کرنے میں اسد علی میمن کو تعاون پیش کرنے پر فخر محسوس کرتا ہے۔ ایک تعلیمی ادارہ کے طور پر وہ اپنے طلباء کی ذاتی کامیابیوں پر یقین رکھتا ہے۔ آئی او بی ایم کلاس روم سے باہر غیرنصابی سرگرمیوں کے مواقع کی فراہمی کے لئے پرعزم ہے۔ آئی او بی ایم میں اسد کا کوہ پیمائی کا جذبہ اور پاکستان کا نام روشن کرنے کا انکا عزم سب کے لئے ایک نمایاں مثال ہے۔

آئی او بی ایم میں ہیڈ آف ڈیپارٹمنٹ، مارکوم، نبھان کریم نے کہا، ”ہم کوہ پیمائی کی دنیا میں اسد کی کامیابیاں ملاحظہ کرنے پر بہت خوش ہیں اور ان کے سفر میں اپنا تعاون پیش کرنے پر فخر محسوس کرتے ہیں۔ آئی او بی ایم ایک ایسا تعلیمی ادارہ ہے جو طلباء کی ذاتی کامیابی کو اہمیت دیتا ہے اور طالب علموں کو انکی دلچسپی کے حامل شعبوں میں آگے بڑھنے کی ترغیب دیتا ہے۔ ہمیں یقین ہے کہ اسد علی میمن کی کامیابیاں دوسرے طالب علموں کو بھی اپنے خوابوں کے تکمیل کی ترغیب دیں گی۔”

اسد کا کوہ پیمائی کا سفر نہ صرف ذاتی ہے بلکہ یہ پاکستان کی مستحکم ترقی کے عزم کی بھی نمائندگی کرتا ہے۔ ملک اور اپنے لوگوں کو اعزاز دلانے سے متعلق ان کی کاوشیں ہم سب کے لئے ایک روشن مثال ہیں۔

- Advertisement -

- Advertisement -

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.