ٹیکنالوجی ، کاروباری اور سٹارٹ اپ خبریں

گرفتاری کے دوران فواد کے خون کے نمونے میں شراب پائی گئی۔

18

- Advertisement -

میڈیکل رپورٹ میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما فواد چوہدری سے گرفتاری کے وقت لیے گئے خون کے نمونے میں الکحل پائی گئی، جس سے اندازہ ہوتا ہے کہ سابق وزیر نشے میں تھے۔ ایکسپریس نیوز اطلاع دی

"25 جنوری 2023 کو صبح 5:00 بجے گرفتاری کا وقت اور 25 جنوری 2023 کی رات 9:45 بجے پمز اسپتال میں نمونے لینے کا وقت مانتے ہوئے، فواد احمد چوہدری نے صبح 5:00 بجے شراب پی لی ہو گی۔ 25 جنوری 2023،” پنجاب فرانزک سائنس ایجنسی کی رپورٹ میں کہا گیا۔

"اگر اوپر بیان کردہ مفروضے درست ہیں، تو خون میں الکحل کی سطح 0.4 جی/ڈی ایل کی مہلک الکحل حراستی کی حد میں ہوگی،” اس نے نتیجہ اخذ کیا۔

مزید پڑھیں: فواد چوہدری: عملیت پسندی سے پاپولزم تک

اسلام آباد پولیس نے زہریلے پن کی رپورٹ آنے کے بعد فواد کے خلاف ایک اور مقدمہ درج کر لیا ہے۔

پی ٹی آئی رہنما کو 25 جنوری کو الیکشن کمیشن آف پاکستان (ECP) اور چیف الیکشن کمشنر (CEC) کے خلاف مبینہ طور پر "تشدد پر اکسانے” کے الزام میں لاہور سے گرفتار کیا گیا تھا۔

ان کے خلاف اسلام آباد کے کوہسار تھانے میں ایف آئی آر درج کی گئی ہے۔ بعد ازاں اسے دو روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کر دیا گیا۔

ریمانڈ ختم ہونے پر فواد کو جوڈیشل مجسٹریٹ کے سامنے لایا گیا جس نے مزید دو دن کی توسیع کر دی۔

سابق وزیر اطلاعات کو بدھ کی شام اڈیالہ جیل سے 20 ہزار روپے کے ضمانتی مچلکے پر رہا کیا گیا تھا۔

- Advertisement -

- Advertisement -

- Advertisement -

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.